کلامِ ساغر: غزل کے اشعار
ساغرصدیقی

کلامِ ساغر: غزل کے اشعار

کلامِ ساغر: غزل کے اشعار, ghazal key ashaar

کلامِ ساغر:   غزل کے اشعار

غم کی تصویر غزل کے اشعار
خون کی تحریر غزل کے اشعار

ان سے تدبیر کی شمعیں روشن
سوز تقدیر غزل کے اشعار

داغ کہتے ہیں محبت کے جنہیں
ان کی تنویر غزل کے اشعار

گیسوئے وقت کو سلجھاتے ہیں
درد شبیر غزل کے اشعار

نالہ و شیون و فریاد کی لے
رقص زنجیر غزل کے اشعار

اے غمِ یار تصور تیرا
تیری توقیر غزل کے اشعار

گل جو رکھتے ہیں خزاں میں ساغرؔ
ان کی تفسیر غزل کے اشعار

شاعر: ساغرصدیقی


مصنف کے بارے میں

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

تبصرہ کیجیے

Click here to post a comment